استغفراللہ! حرم کعبہ میں تاش کھیلنے کے بعد سعودی خواتین کے مسجد میں ڈانس کی ویڈیو سامنے آ گئی

 مسجد میں ڈانس کرنے پر دو خواتین کو سعودی عرب میں گرفتار کر لیاگیا ہے، تفصیلات کے مطابق ویب سائٹ انسٹا گرام پر ایک ویڈیو شیئر کی گئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دو خواتین برقع پہن کر مسجد کے عین درمیان میں رقص کر رہی ہیں۔جب یہ ان خواتین کی مسجد کے تقدس کو پامال کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر سامنے آئی تو صارفین نے ان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور ابھی تک یہ سلسلہ جاری ہے، صارفین نے اپنے کمنٹس میں ان خواتین کے عقیدے اور عقل پر بھی

افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ایک صارف نے ان خواتین کا حوثیوں سے موازنہ کرتے ہوئے لکھا کہ حوثی بھی رقص کرتے تھے اور اب سعودیوں نے بھی وہی کام شروع کردیا ہے اور دونوں ہی اس وقت تباہی کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں۔ اس مسجد کے بارے میں بتایا جا رہا ہے کہ یہ مسجد شاہراہ مکہ اور مدینہ پر موجود ایک قیام و طعام کے مقام پر واقع ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل حرم کعبہ کے بیرونی صحن میں تاش کھیلنے والی خواتین کی سوشل میڈیا پر تصاویر وائرل ہوئی تھیں جنہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا، واضح رہے کہ واٹس ایپ، ٹویٹر اور فیس بک پر گزشتہ 3 دن سے 4 خواتین کی تصاویر دنیا بھر میں شیئر کی گئیں جو حرم مکی شریف کے جنوبی صحن میں تاش کھیلنے میں مصروف تھیں، حرم انتظامیہ میں رہنمائی کے شعبے میں کام کرنے والی اہلکار نے ان خواتین سختی سے سمجھایا کہ حرم کے صحن میں ان کا تاش کھیلنا اس مقام کی قدسیت کے خلاف ہے۔ جب تاش کھیلنے والی خواتین یہ سنا تو انہوں نے کھیلنا بند کر دیا اور اپنے باقی اہل خانہ کا انتظار کرنے لگیں، زائرین حرم میں سے کچھ نے ان خواتین کی تاش کھیلتے تصاویر سوشل میڈیا پر شیر کر دی تھیں۔