• لورالائی میں دہشت گردی کا بڑا منصوبہ ناکام، 4 خودکش حملہ آور ہلاک

    بلوچستان کے ضلع لورالائی میں سیکیورٹی فورسز سے فائرنگ کے تبادلے پر خاتون سمیت چار خودکش بمباروں نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق لورالائی میں خفیہ اطلاع پر سیکیورٹی فورسز نے ناصرآباد میں مکان پر چھاپہ مارا، تو مکان میں موجود دہشت گردوں نے سیکیورٹی اہلکاروں پر فائرنگ کردی، جواب میں سیکیورٹی فورسز نے بھی فائرنگ کی۔ جس کے نتیجے میں ایک دہشت گرد مارا گیا، سیکیورٹی فورسز کی بہترین حکمت عملی کے باعث خودکش بمباروں کو فرار ہونے کا راستہ نہ مل سکا تو خاتون سمیت تین خودکش بمباروں نے خود کو دھماکے سے اڑالیا۔ اے ایس پی لورالائی کے مطابق فائرنگ کے تبادلے میں چار اہلکار زخمی بھی ہوئے جبکہ دھماکے سے ساتھ والے مکان کی دیوار گرنے سے مزید چار افراد زخمی بھی ہوئے۔

  • ہندو مذہب چھوڑکراسلام قبول کرنے والی دونوں بہنوں کو دارلامان بھجوانے کا حکم

    اسلام آباد ہائی کورٹ نے ہندو مذہب چھوڑکراسلام قبول کرنے والی دو بہنوں کو کیس کی تحقیقات مکمل ہونے تک دارلامان بھجوانے کا حکم دیا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ میں ہندو مذہب چھوڑکراسلام قبول کرنے والی گھوٹکی کی دو بہنوں کی درخواست پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ اطہر من اللہ نے سماعت کی، اس موقع پر ڈپٹی کمشنر اسلام آباد بھی عدالت میں پیش ہوئے۔

  • پیپلزپارٹی نے بھرپور سیاسی قوت کا مظاہرہ کرنے کی ٹھان لی

    پیپلزپارٹی نے بھرپور سیاسی قوت کا مظاہرہ کرنے کی ٹھان لی، کارروان بھٹو آج کراچی سے لاڑکانہ کے لیے روانہ ہوگا، کینٹ سٹیشن پر استقبالیہ کیمپ لگا دیئے گئے۔ بلاول بھٹو زرداری آج کینٹ سٹیشن کراچی سے کارروان بھٹو کا آغاز کریں گے، کینٹ سٹیشن پر جیالوں نے ابھی سے میلہ لگالیا۔ بلاول بھٹو کارکنان سے خطاب بھی کریں گے، اگلا پڑاؤ لانڈھی ہوگا، جنگ شاہی، کوٹری، حیدرآباد، اوڈیرو لعل، مٹیاری، ٹنڈو آدم، شہداد پور سٹیشنز پر چیئرمین کے خطاب کے بعد کارروان رات 8 بجے نواب شاہ پہنچے گا۔ بدھ کی صبح دس بجے کارروان آگے بڑھے گا، دوڑ، پڈعیدن، محراب پور، بھریا روڈ، رانی پور، خیرپور میرس، روہڑی، سکھر، گوسرجی، حبیب کوٹ، مدیجی، نوڈیرو کے شہریوں سے خطاب کرتے ہوئے بلال بھٹو لاڑکانہ پہنچیں گے اور اختتامی خطاب کریں گے۔ پی پی رہنماؤں کا دعویٰ ہے کہ عوام کا جم غفیر اپنے لیڈر کا استقبال کرے گا۔

  • وزیراعظم کی زیرِصدارت آج کابینہ اجلاس، 20 نکاتی ایجنڈا زیرغور آئیگا

    وزیراعظم عمران خان کی زیرِصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس آج ہو گا، کابینہ "لاہور نئی دہلی بس سروس" معاہدے میں توسیع سمیت 20 نکاتی ایجنڈے پر غور کرے گی۔ وزیرِاعظم ہاؤس میں ہونے والے اجلاس میں ملک کی سیاسی اور معاشی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا۔ وزیراعظم عمران خان ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کے دورہ پاکستان پر کابینہ کو اعتماد میں لیں گے۔ وزیر خزانہ اسد عمر ملائیشیا کے ساتھ ہونے والے معاہدوں پر بریف کریں گے۔ کابینہ "لاہور نئی دہلی بس سروس"معاہدے میں توسیع کا جائزہ لے گی۔ اجلاس میں سرمایہ کاری بورڈ اور کراچی انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بورڈ کی تشکیلِ نو کی سمری بھی زیرِ غور آئے گی۔ وفاقی کابینہ میں ہوا بازی پالیسی 2019ء منظوری کے لئے پیش کی جائے گی۔ پاکستان سکھ گوردوارہ پربندھک کمیٹی کی تشکیلِ نو کا بھی کابینہ جائزہ لے گی۔ اجلاس میں پی ٹی ڈی سی میں غیر قانونی بھرتیوں کا معاملہ بھی زیرِ غور آئے گا۔ کابینہ مختلف اداروں میں تعیناتیوں کی منظوری دینے کے ساتھ اقتصادی رابطہ کمیٹی اور کابینہ کمیٹی توانائی کے فیصلوں کی توثیق بھی کرے گی۔

  • 'نواز شریف کی صحت سانحہ ماڈل ٹاؤن کے فیصلے تک ٹھیک رہنی چاہیئے'

    ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا ہے ماڈل ٹاؤن سانحے کا معاملہ اللہ پر چھوڑ دیا، پہلی بار نواز شریف کا بیان ریکارڈ کیا گیا، غیر جانبدار تحقیقات ہوئی، نواز شریف کی صحت کیس کے فیصلے تک ٹھیک رہنی چاہیئے۔ پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے ترکی سے وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کے لیے بنائی گئی جے آئی ٹی سے تو مطمئن ہیں لیکن جیسے ہی عدالتی فیصلے کا پتہ چلا کہ جے آئی ٹی کو روک دیا گیا ہے وطن واپس آگیا۔ انہوں نے کہا انصاف کے لیے اگر سپریم کورٹ بھی جانا پڑا تو گریز نہیں کریں گے، یہ واحد جے آئی ٹی تھی جس نے نواز شریف، شہباز شریف سمیت تمام فریقین کے بیانات ریکارڈ کیے اور میرٹ پر تحقیقات کیں، اب اگر میرٹ پر جے آئی ٹی بنی ہے تو لیگیوں کو تکلیف کیا ہے۔ نواز شریف کی صحت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ کہ دعا ہے وہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے فیصلے تک صحت مند رہیں۔

  • امید ہے آئی ایم ایف کو شرائط میں نرمی پر آمادہ کر لیں گے: وفاقی وزیرخزانہ

    اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے بات چیت جاری ہے اور امید ہے آئی ایم ایف کو شرائط میں نرمی پر آمادہ کرلیں گے۔ ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف کے نئے مشن چیف ارنسٹو ریمریز آج رات پاکستان پہنچیں گے جہاں وہ کل وزیر خزانہ اسد عمر سے ملاقات کریں گے جس میں متوقع مالی پیکیج پر بھی بات ہوگی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف مشن چیف، اسٹیٹ بینک سمیت اقتصادی ٹیم سے بھی ملیں گے، اُنہیں پاکستان کی اقتصادی صورتحال پر بریفنگ دی جائے گی۔ اس حوالے سے وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف سے بات چیت جاری ہے، امید ہے آئی ایم ایف کو شرائط میں نرمی پر آمادہ کر لیں گے۔ یاد رہے کہ گزشتہ دنوں قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ میں بریفنگ دیتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کا مطالبہ ہے کہ ڈالر مارکیٹ ریٹ پر لایا جائے، بجلی اور گیس کے نقصانات کم کیے جائیں اور سرکاری اداروں کے نقصانات کو کم کیا جائے۔ وزیر خزانہ نے مزید کہا تھا کہ آئی ایم ایف سے معاہدے کے قریب آچکے ہیں اور اختلافات کم ہو چکے ہیں۔