• پاکستان اور بھارت میں ثالثی: ٹرمپ کے عمران اور مودی سے ٹیلی فونک رابطے

    امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کیلئے متحرک ہوگئے، انہوں نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کو فون کیا اور کشیدگی میں کمی پر زور دیا، ٹرمپ نے وزیر اعظم عمران خان سے رات گئے دوسری باررابطہ کیا اور انہیں مودی سے ہونیوالی گفتگو سے آگاہ کیا۔ عمران خان نے امریکی صدر کو وادی کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں کرفیو فوری ختم کرایا جائے اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں اور یو این مبصر مشن بھجوائے جائیں تاکہ وادی میں اصل صورتحال دنیا کے سامنے آسکے۔ انہوں نے کشمیر کے معاملے پر کردار ادا کرنے پر امریکی صدر کا شکریہ بھی ادا کیا۔ پیر کی رات دس بجے امریکی صدر نے وزیر اعظم عمران خان کو ٹیلی فون کیا جس میں پاک بھارت کشیدگی اور کشمیر سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا، عمران خان نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے صدر ٹرمپ اپنا کردار ادا کریں گے۔ پیر کی رات تقریباً 11 بجے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سیکرٹری خارجہ سہیل محمود کے ہمراہ دفتر خارجہ میں ہنگامی پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 16 اگست کو وزیراعظم عمران خان کی صدر ٹرمپ سے ٹیلیفونک گفتگو ہوئی تھی جس میں امریکی صدر نے کہا تھا کہ وہ اس معاملے پر مودی سے بات کریں گے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ صدر ٹرمپ نے مودی سے ٹیلی فون پر گفتگو کی جس میں انہوں نے کہا کہ خطے کا امن برقرار رہنا چاہیے، انہوں نے وزیر اعظم عمران خان سے دوبارہ رابطہ کر کے اس حوالے سے آگاہ کیا، عمران خان نے امریکی صدر کو بھارتی اقدام کے باعث خطے میں پیدا ہونیوالی صورتحال سے آگاہ کیا۔ وزیر اعظم پاکستان نے انہیں بتایا کہ مودی سرکار کے پانچ اگست کے یکطرفہ اقدام نے خطے کے امن کو خطرات سے دوچار کر دیا ہے ۔ ان اقدامات کا مقصد بین الاقوامی سطح پر متنازعہ معاملہ ختم کرنا تھا اور اس کے پیچھے بھارت آبادیاتی تناسب کو تبدیل کرنا چاہتا ہے تاکہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کیا جائے۔ انہوں نے صدر ٹرمپ کو بتایا کہ ہندوستان کے یہ یکطرفہ اقدامات بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کی نفی ہیں۔ وادی میں ایک نیا انسانی بحران جنم لیتا دکھائی دیتا ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا صدر ٹرمپ کو بتایا گیا کہ آج کرفیو کو پندرہ روز گزر گئے ہیں۔ ہماری اطلاعات کے مطابق بہت سے لوگوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور بہت سے لوگ لاپتہ ہیں۔ وزیر اعظم نے امریکی صدر سے کردار ادا کرنے کا کہا اور کہا کہ ہندوستان کو فی الفور کرفیو اٹھانے کا کہا جائے۔ بھارت بین الاقوامی کمٹمنٹ کی پاسداری کرے اور اس مسئلے کا حل سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کرے جس کا وہ پابند ہے۔ انہوں کہا کہ وزیر اعظم نے جس طرح پاکستان کا مقدمہ صدر ٹرمپ کے سامنے پیش کیا مجھے ان پر فخر ہے۔ امید ہے ٹرمپ تنازع حل کرانے میں کردار ادا کریں گے۔ اس سے قبل امریکی صدر نے پاکستان اور بھارت پر زور دیا کہ مسئلہ کشمیر کے معاملے پر کشیدگی میں کمی کریں، وائٹ ہاؤس کے ترجمان کے مطابق پیر کو بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے امریکی صدر نے کشیدگی میں کمی اور امن کے قیام کی اہمیت پر زور دیا۔ گفتگو میں دونوں رہنماؤں نے تجارت میں اضافے کے ذریعے باہمی معاشی تعلقات کے فروغ کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا، مودی نے ٹرمپ سے کہا کہ دونوں ممالک کے وفود جلد تجارتی معاملات پر مذاکرات کریں گے۔

  • عمران اور مودی سے مسئلہ کشمیر پر کشیدگی کم کرنے پر بات ہوئی: ٹرمپ

    امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے متعلق وزیراعظم عمران خان اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے نئی پیش قدمی۔ صدر نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے اپنے دو بہترین دوستوں وزیراعظم عمران خان اور نریندی مودی سے بات کی ہے، دونوں ممالک کے وزرائے اعظم سے تجارت، اسٹریٹجک شراکت داری پر بات ہوئی۔ امریکی صدر کا کہنا تھا کہ انہوں نے پاکستان اور بھارت کو سب سے اہم ایشو کشمیر پر جاری ٹینشن کو کم کرنے کے درخواست بھی کی۔ ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا صورتحال مشکل ہے لیکن عمران خان اور مودی سے بات چیت مفید رہی۔ یاد رہے اس سے پہلے وزیراعظم عمران خان کے امریکا دورے کے دوران صدر ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالثی بننے کی بھی پیش کش کی تھی۔

  • آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازت میں تین سال کی توسیع

    پاک فوج کے سپہ سالار آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں 3 سال کی توسیع کر دی گئی ہے۔ وزیراعظم آفس کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کا فیصلہ کرتے ہوئے آئندہ 3 سال کیلئے پاک فوج کا سپہ سالار مقرر کر دیا گیا ہے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی توسیع کا فیصلہ ملک اور خطے میں جاری امن کی کوششوں کے تسلسل کیلئے کیا گیا ہے۔

  • جعلی اکاؤنٹس کیس: مبینہ مرکزی کردار ناصر عبداللہ وعدہ معاف گواہ بن گیا

    جعلی اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگیا۔ منی لانڈرنگ کا مبینہ مرکزی کردار اماراتی شہری ناصر عبد اللہ وعدہ معاف گواہ بن گیا۔ نیب نے ناصرعبد اللہ کا بیان بھی ریکارڈ کرلیا، اہم شواہدحاصل کر لیے، ناصر عبداللہ کو احتساب عدالت میں بھی پیش کیا گیا۔ وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست پر حتمی فیصلہ چیئرمین نیب کریں گے۔ ناصر عبداللہ منی لانڈرنگ ریفرنس میں نامزد تھے۔ اماراتی شہری ناصرعبداللہ لوتھا نے دفعہ 164 کا بیان ریکارڈ کرا دیا۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر وسیم احمد نے بطور مجسٹریٹ بیان ریکارڈ کیا۔ ناصر لوتھا نے اپنے بیان میں کہا منی لانڈرنگ سے کوئی تعلق نہیں، عبدالغنی مجید نے میری دستاویزات کو غلط استعمال کیا، نیب کی تفتیش میں مکمل تعاون کرنے کو تیار ہوں۔ ناصرعبداللہ کے وارنٹ گرفتاری منسوخ کر دیئے گئے، ناصر عبداللہ سمٹ بینک کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین ہیں۔

  • سندھ طاس معاہدہ عملاً معطل، سیلاب کے پیش نظر درجنوں دیہات خالی

    بھارت نے سندھ طاس معاہدہ عملاً معطل کر دیا، قصور کے قریب دریائے ستلج میں پانی کی سطح مسلسل بلند ہونے لگی، درجنوں دیہات خالی کرنے کی ہدایات، سیلاب کی وارننگ جاری کر دی گئی۔ باکھڑا ڈیم سے دریائے ستلج میں چھوڑے گئے پانی کے باعث گنڈا سنگھ والا اور چینیوٹ میں دریائے چناب کے مقام پر پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ فلڈ کنٹرول روم کا کہنا ہے اس وقت 64000 کیوسک پانی کا ریلا چناب پل سے گزر رہا ہے۔ ہیڈ سلیمانکی ہیڈ ورکس پر پانی کی آمد 24491 کیوسک اور اخراج 12335 کیوسک ہے۔ بھارت کی آبی جارحیت کے حوالے سے ڈپٹی انڈس واٹر کمشنر شیراز میمن نے دنیا نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کشمیر ایشو کی آڑ میں بھارت نے عملا سندھ طاس معاہدہ معطل اور پانی پر ہر طرح کی ڈیٹا شیئرنگ بند کر دی ہے۔ شیراز میمن نے کہا بھارت نے ڈیموں سے پانی کے اخراج پر کوئی پیشگی اطلاع نہیں دی، بھارت مسلسل انڈس ٹریٹی کی خلاف ورزی کر رہا ہے، یکم جولائی سے ستمبر تک کا دریاؤں کا ڈیٹا بھی نہیں بھجوایا گیا۔ دریائے سندھ میں تورغر کے مقام پر بڑے سیلابی ریلے کا خدشہ ہے۔ ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے مطابق اگلے 24 گھنٹوں میں بڑا ریلا گزرنے کا خطرہ ہے۔ دریائے سندھ میں آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ممکنہ سیلاب کے پیش نظر ضلعی انتظامیہ نے ریڈالرٹ جاری کر دیا ہے۔ دریا کنارے آبادی کو محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ ادھر چترال ار غوچ میں درمیانے درجے کا سیلابی پانی گورنمنٹ مڈل سکول میں داخل ہو گیا۔ وادی ریمبور روڈ پر ہونے والی لینڈ سلائیڈنگ سے فصلوں کو نقصان پہنچا، علاقے میں امدادی سرگرمیاں جاری ہیں۔

  • پاکستان اور فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے درمیان آسٹریلیا میں مذاکرات

    پاکستان اور فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے درمیان مذاکرات آسٹریلیا میں جاری ہیں، پاکستان عالمی ادارے کو اینٹی منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کو فنڈنگ کی روک تھام کے اقدامات سے آگاہ کرے گا۔ پاکستان اور ایف اے ٹی ایف ایشیا پیسفک گروپ کے درمیان مذاکرات میں نیکٹا، ایف بی آر، ایس ای سی پی، ایف آئی اے اور فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کے حکام شریک ہیں۔ ایف اے ٹی ایف پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے اقدامات کی رپورٹ کا جائزہ لے گا۔ ایف اے ٹی ایف کو پیش کی گئی رپورٹ پاکستان کے پانچ اداروں نے مل کر تیار کی ہے جس میں منی لانڈرنگ، دہشت گردوں کے فنڈز کی روک تھام کی تفصیلات شامل ہیں، دہشت گردوں کو اثاثوں کی منتقلی روکنے کے لئے اقدامات بھی رپورٹ کا حصہ ہیں۔